روضہ منوره حضرت امام علی رضاؑ کی ویب سائٹ

امام سجاد علیہ السلام کے القاب

امام سجاد علیہ السلام کے القاب

آپ کے القاب اچھا ئیوں کی حکایت کرتے ہیں، آپ اچھے صفات، مکارم اخلاق، عظیم طاعت اور اللہ کی عبادت جیسے اچھے اوصاف سے متصف تھے، آپ کے بعض القاب یہ ہیں

مزید
 
در صورت تمایل برای استفاده مناسب از امکانات و خدمات حرم مطهر رضوی و دسترسی سریع به معارف امام رضا علیه السلام نرم افزار همراه رضوی را دانلود و نصب نمائید.

دانلود نرم افزار همراه رضوی نسخه اندروید  
×
رسالہ حقوق امام سجاد علیہ السلام
امام سجاد علیہ السلام کے القاب
  • 2017.10.15 воскресенье امام سجاد علیہ السلام کے القاب
    آپ کے القاب اچھا ئیوں کی حکایت کرتے ہیں، آپ اچھے صفات، مکارم اخلاق، عظیم طاعت اور اللہ کی عبادت جیسے اچھے اوصاف سے متصف تھے، آپ کے بعض القاب یہ ہیں
واقعہ کربلا اور امام سجاد علیہ السلام
  • 2017.10.15 воскресенье واقعہ کربلا اور امام سجاد علیہ السلام
    ۶۰ھ میں سید سجاد علیہ السّلام کی عمر ۲۲ سال کی تھی جب حضرت امام حسین علیہ السّلام کو عراق کا سفر درپیش ہوا اور سید سجاد علیہ السّلام بھی ساتھ  تھے۔ نہیں کہا جاسکتاکہ راستہ ہی میں یا کربلا پھنچنے کے بعد کہاں بیمار ہوئے اور دس محرم ۶۱ھ کوامام حسین علیہ السّلام کی شھادت کے موقع پر اس قدر بیمار تھے کہ اٹھنا بیٹھنا مشکل تھا
سفیر کربلا، زینب (س)
  • 2017.10.11 среда سفیر کربلا، زینب (س)
    ایک مرتبہ حضرت زہرا(س) نے  حضرت رسول خدا(ص) سے ان بہن بھائی کی محبت پر اظہار تعجب فرمایا، تو  حضرت رسول خدا(ص) نے آہ سر دکھینچی، آنکھیں اشکبار ہوگئیں؛ فرمایا: میری بیٹی زینب(س) حسین(ع) کے ساتھ کربلا جائے گی اور مختلف طرح کی مصیبتیں برداشت کرے گی
عزاداری امام حسینؑ اہل سنت کی نگاہ میں
  • 2017.10.7 суббота عزاداری امام حسینؑ اہل سنت کی نگاہ میں
    امام حسینؑ اور آپ کے وفادار اصحاب پر عزاداری کرنا صرف شیعوں کے ساتھ مختص نہیں بلکہ اہل سنت بھی آپ ؑ کی شہادت پر غم و غصہ کا اظہار کرتے ہیں اگرچہ اظہار غم کی کیفیت مختلف ہے لیکن قاتلین حسینؑ سے بیزاری کا اعلان سب نےکیا ہے

امام رضا علیہ السلام کی ملکوتی بارگاہ ایک ایسا دروازہ ہے جوخدا کی طرف کھلتا ہے۔ یہ ملکوتی بارگاہ ہر اس شخص کے لئے پناہ گاہ ہے جو رازونیاز کرنے کے لئےاس کی طرف دوڑا چلا آتا ہے، امام علی ابن موسیٰ الرضا علیہ السلام نے اپنی آغوش رحمت کو اپنے چاہنے والوں کے لئے پھیلا رکھاہے اور توس کی سرزمین پر اپنے وجود کی خوشبوسے اپنے زائرین اور مجاورین کی روح اور جان کو محبت اور رأفت سے نوازتے ہیں۔ لیکن ایسے آسمانی اور ملکوتی گوھر کا مہمان اور میزبان ہونا بھی کوئی آسان کام نہیں ہے ۔اور ایک ایسی فضا اورماحول کو جو امام ھمام کی شأن و منزلت کے مطابق ہو ایجاد کرنے کے لئے مسئولیت کا قبول کرناایک مھم اور مشکل کام ہے ۔ اس مھم کام کی ذمہ داری ادارہ ’’آستان قدس رضوی‘‘ کے اوپر ہے۔ ’’آستان قدس رضوی‘‘ رسمی طور پر ایک ایسے مجموعہ ہے جو حرم امام رضا علیہ السلام  اور اس کی موقوفات اور جتنے بھی اس کے متعلقات ہیں ان کی سرپرستی اور مدیریت کرتا ہے۔ یہ ادارہ اپنی تمام تر تلاش کو بہ روئے کار لاتے ہوئے امام رضا علیہ السلام کے زائرین اور مجاورین کی ضروریات کو نذورات اور زائرین کی موقوفات پر تکیہ کرتے ہوئے پوری کرتا ہے۔ حریم مقدس حرم کی نوسازی ومرمّت  اور اس کی حفاظت اور زائرین کی میزبانی کے لئےمتبرک مقامات کی آمادہ سازی، معرفت اور آسانی سے زیارت کرنے کے لئے مختلف امکانات کا مھیا کرنا، زائرین کی راھنمائی اور۔۔۔ یہ چند ایک آستان قدس رضوی کی ایسی خدمات ہیں جن کو پہلی نگاہ میں مشاھدہ کیا جا سکتا ہے۔ لیکن آستان قدس رضوی کی فعالیتوں کی حد و حدود ،حرم مطہر کے وسیع وعریض ابعاد سے بھی فراتر ہے۔ میوزیم، لائبریریز، یونیورسٹیاں اور مدارس، میڈیکل سینٹر اور ہسپٹلز اور انڈسٹریز سینٹرز،آستان قدس رضوی کی چند ایک دوسری فعالیتیں ہیں۔ اس ادارے کے مھم اھداف سےمزید آشنا ہونے کے لئے آپ آستان قدس رضوی کی بیس سالہ کی گئی پلاننگ کے مجوزات کو دیکھ سکتے ہیں۔